ایبٹ آباد کی غریب فیملی پر راولپندی میں ظلم کے پہا ڑ ٹوٹ گئے ۔۔انصاف کی اپیل

راولپنڈی(سردار فیضان سے) تھانہ ائیرپورٹ کی حدود جوڈیشنل کالونی کے رہاہشی ظالم میاں بیوی نے ایبٹ آباد تاجوال کے رہاہشی غریب خاندان تاحال مقیم شاہ خالد کالونی یاسمین بی بی دختر محمد شریف مرحوم اور دو بچے مدثر اور صبحاہ کو عرصہ دو سال قبل ملازمت پر رکھا اور اس عرصہ میں صرف چند ماہ کی تنخواہ دی اور نہ ہی چٹھی دی اس دوران ان کو گھر سے باہر نہیں نکلنے دیا نہ ہی کسی سےملنے دیا پیسے اورچٹھی مانگنے پر ان غریب ماں اور بچوں پر شدید زہنی اور جسمانی تشدد کیا گیا جس سے مسمات (ی) کا دو دفعہ بازو ٹوٹا ماں بیٹی کے جسم پر شدید مار پیٹ سے زخموں کے نشان پڑھ گئے جس سے ان کے دماغ پر بھی برا اثر ہوا گزشتہ ہفتے یہ لوگ بڑی مشکل سے بھاگنے میں کامیاب ہوگئے اور پولیس کو 15 پر کال کی اور واقعہ کی اطلاعی رپورٹ پولیس چوکی گلزار قاٸد میں درج کرواٸی گئی بعد ازاں کارواٸی نہ ہونے پر تھانہ ائیرپورٹ میں بھی درخواست دی جبکہ تاحال پولیس نے کوٸی کارواٸی عمل میں نہ لائی جس کی وجہ سے متاثرہ خاندان در بدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہے متاثرین نے وزیراعظم اور وزیراعلی پنجاب اور اعلی حکام سے درخواست کی ہے کہ واقعہ میں ملوث میاں بیوی کے خلاف فوری ایف آٸی آر درج کرکے کاروائی عمل میں لائی جائے اگر ہمیں انصاف نہ ملا تو ہم خود سوزی پر مجبور ہوجاہنگے جس کی تمام تر ذمہ داری انتظامیاں پر عائد ہوگی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں